حکومت نے آفتاب سلطان کوچیئرمین نیب تعینات کردیا

حکومت نے سابق ڈائر ایکٹر جنرل انٹیلی جنس بیوروآفتاب سلطان کی بحیثیت چیئرمین نیب تعیناتی کی منظوری دے دی۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں مختلف امور پر غور کیا گیا۔ کابینہ نےآفتاب سلطان کی تعیناتی کا فیصلہ وزیر اعظم اور اپوزیشن لیڈر راجہ ریاض میں اتفاق رائے کے بعد کیا گیا۔ وزیر اعظم نے لاہور میں اتحادی جماعتوں کے سربراہاں سے بھی مشاورت کے بعد فیصلہ کیا، ان کا نام مسلم لیگ (ن) نے تجویز کیا تھا۔

یاد رہے کہ آفتاب سلطان آئی جی پنجاب اور نیشنل پولیس اکیڈمی کے کمانڈنٹ بھی رہ چکے ہیں،انہیں پی پی پی حکومت میں وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے انٹیلی جنس بیورو کا ڈائریکٹر جنرل تعینات کیا تھا اور شاہد خاقان عباسی کی ن لیگ حکومت میں بھی اس عہدے پر 5 سال تک فائز رہے۔

آفتاب سلطان کا تعلق فیصل آباد سے ہے۔ انہوں نے پولیس میں اپنے کیریئر کاآغاز 1977ءمیں بطور اے ایس پی پنجاب پولیس کیا تھا۔ آفتاب سلطان کے والد اور ساس دو دو مرتبہ رکن قومی اسمبلی رہ چکے ہیں۔چیئرمین نیب کے لئے پی پی پی نے جسٹس ریٹائرڈ مقبول باقر کا نام تجویز کیا تھا لیکن ان کی ریٹائرمنٹ کی دوسال کی مدت مکمل نہیں ہوئی تھی جس کی وجہ سے ان کی منظوری نہیں دی گئی۔

Related Articles

Back to top button