سپریم جوڈیشل کونسل نے چیف جسٹس کے نامزد تمام نام مسترد کردیئے

سپریم جوڈیشل کونسل نے چیف جسٹس آف پاکستان کی طرف سے عدالت عظمیٰ میں تعیناتی کیلئے نامزد تمام نام کثرت رائے سے مسترد کردیئے۔

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس عمر عطاء بندیال کی زیر صدارت سپریم جوڈیشل کونسل پاکستان کا اجلاس ہوا، جس میں سندھ سے تین، پنجاب اور خیبرپختونخوا سے ایک ایک جج کو عدالت عظمیٰ میں تعینات کرنے پر غور کیا گیا۔

جوڈیشل کونسل نے چیف جسٹس کے نامزد تمام نام کثرت رائے سے مسترد کردیئے، اجلاس میں جسٹس قیصر رشید، جسٹس شاہد وحید، جسٹس حسن اظہر، جسٹس شفیع صدیقی اور جسٹس نعمت اللہ کے ناموں پر بھی غور کیا گیا۔اجلاس میں 5 ارکان نے سپریم کورٹ میں تعیناتیوں کی مخالفت کی، جس میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ، جسٹس سردار طارق مسعود، اٹارنی جنرل اشتر اوصاف، وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ اور نمائندہ پاکستان بار کونسل ایڈووکیٹ اختر حسین شامل ہیں۔

اجلاس میں سپریم کورٹ میں ججز کی خالی اسامیوں کیلئے لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد وحید، پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس قیصر رشید کو سپریم کورٹ میں لانے کیلئے نامزد کیا گیا، اس کے علاوہ سندھ ہائی کورٹ کے 3 ججز جسٹس حسن اظہر، جسٹس شفیع صدیق اور جسٹس نعمت اللہ کو بھی خالی ججز کے عہدوں پر مقرر کرنے پر غور کیا گیا۔

واضح رہے کہ جوڈیشل کمیشن کا اجلاس سپریم کورٹ میں 5 ججز کی تقرری کیلئے بلایا گیا تھا، سپریم کورٹ میں اس وقت 4 ججز کے عہدے خالی ہیں، جبکہ جسٹس سجاد علی شاہ کی اگست میں ریٹائرمنٹ پر ایک اور سیٹ خالی ہوگی۔

Related Articles

Back to top button