مہنگائی ،نیب کا خاتمہ،عدالتی اصلاحات:ن لیگ کے منشور کااعلان 

مسلم لیگ ن کی منشور کمیٹی کے چیئرمین سینیٹر عرفان صدیقی نے ماڈل ٹاؤن میں نواز شریف اور شہباز شریف کی موجودگی میں پارٹی منشور کا اعلان کیا۔

سینیٹر عرفان صدیقی کا کہنا تھا منشور کی تشکیل کے لیے 32 کمیٹیوں نے دن رات محنت کی، میرے لیے بہت آسان تھا کہ میں 8 سے 10 صفحے کا منشور لکھ کر کسی لیڈر کو دے دیتا اور کہتا کہ اسے پڑھ دیں یہ منشور ہے لیکن ہم نے اس میں یہ بتایا کہ پچھلی حکومتوں کی کارکردگی کیا رہی اور کس حکومت نے کیا کام کیے۔ان کا کہنا تھا میں نے احسن اقبال سے کہا کہ ذیلی کمیٹیوں نے اتنے بڑے بڑے تھیسز بھیج دیے ہیں کہ ان پر تو الگ سے کتاب لکھی جانی چاہیے۔

 مسلم لیگ ن کے منشور کے اہم نکات

تمام سرکاری دفاتر کو ماحول دوست بنائیں گے،پارلیمنٹ کی بالادستی کویقینی بنایا جائے گا۔آرٹیکل 62 اور 63 کواپنی اصل حالت میں بحال کیا جائے گا۔عدالتی، قانونی، پنچایت سسٹم اور تنازعات کے تصفیے کا متبادل نظام ہوگا۔عدالتی، قانونی اور  انصاف کے نظام میں اصلاحات کی جائیں گی۔بر وقت اور مؤثر عدالتی نظام کا نفاذ کیا جائےگا۔مؤثر، منصفانہ اور بروقت پراسیکیوشن ہوگی۔یقینی بنایا جائے گا کہ بڑے اور مشکل مقدمات کا فیصلہ ایک سال کے اندر ہوگا۔چھوٹے مقدمات کا فیصلہ دو ماہ میں سنایا جائے گا۔نیب کا خاتمہ کیا جائے گا۔انسداد بدعنوانی کے اداروں اور ایجنسیوں کو مضبوط کیا جائےگا۔ضابطہ فوجداری 1898 اور 1906 میں ترامیم کی جائے گی۔عدالتی کارروائی براہ راست نشرکی جائے گی۔کمرشل عدالتیں قائم کی جائیں گی۔سمندر پار پاکستانیوں کی عدالتیں بہتر اور مضبوط بنائی جائیں گی۔عدلیہ میں ڈیجیٹل نظام قائم کیا جائے گا

معاشی اصلاحات

مالی سال 2025 تک مہنگائی میں 10 فیصد کمی کی جائے گی۔چار سال میں مہنگائی 4 سے 6 فیصد تک لائی جائے گی۔پانچ سال میں ایک کروڑ سے زائد نوکریاں دی جائیں گی۔کرنٹ اکاؤنٹ خساره جی ڈی پی کا 1.5 فیصد تک کیا جائے گا۔تین سال میں اقتصادی شرح نمو 6 فیصد سے زائد پر لائی جائے گی۔

Related Articles

Back to top button