مجھے یقین تھا فل کورٹ نہیں بنے گا اورانصاف نہیں ملے گا

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے ہمارے 20ووٹ ہم سے چھین لئے، پرویز الٰہی کی اکثریت تو آپ کی دین ہے، می لارڈ، مجھے کم از کم یقین تھا فل کورٹ نہیں بنے گا اور انصاف نہیں ملے گا اور یہی میں قوم کو بتانا چاہتی تھی۔

سپریم کورٹ کی جانب سے ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی کی رولنگ کیخلاف پرویز الٰہی کی درخواست پر سماعت کیلئے حکمران اتحاد کی فل کورٹ کی تشکیل کیلئے دائر درخواستیں مسترد کیے جانے کے بعد سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر مریم نواز نے ایک پیغام میں کہا ہمارے 20 ووٹ بھی آپ نے ہم سے چھین لئے، ق لیگ کے 10 ووٹ بھی آپ نے پی ٹی آئی کو عطاء کردیئے۔

ا نکا کہنا تھا پرویز الہٰی صاحب کی اکثریت تو آپ کی دین ہے، می لارڈ!۔ مریم نواز شریف نے سوالا اٹھایا کہ کہیں لکھا ہے پارٹی کا سربراہ پارلیمنٹ کا ممبر ہونا چاہئے؟، لکھا ہے تو بتائیں؟۔

مریم نواز شریف کا اتازہ ٹوئٹر پیغام میں کہا جب فیصلے آئین، قانون اور انصاف کے مطابق نہ ہوں تو فُل کورٹ سے خطرہ رہتا ہے، کیونکہ ایماندار ججز کے شامل ہونے سے فیصلے کی خامیاں منظرِ عام پر آ جاتی ہیں اور لوگ جان جاتے ہیں کہ فیصلہ آئین و قانون نہیں، ذاتی پسند و ناپسند کی بنیاد پر کیا گیا ہے، مگر اب کچھ بھی کرلیں، لوگ تو جان گئے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ مجھے کم از کم یقین تھا فل کورٹ نہیں بنے گا اور انصاف نہیں ملے گا اور یہی میں قوم کو بتانا چاہتی تھی۔

Related Articles

Back to top button