نگران وزیراعظم کیلئے سابق چیف جسٹس گلزاراحمد کا نام تجویز

تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے نگران وزیراعظم کیلئے سابق چیف جسٹس پاکستان گلزاز احمد کا نام تجویز کر دیا ہے۔
سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک پیغام میں فواد چوہدری نے کہا صدر ملک کے خط کے جواب میں تحریک انصاف کی کور کمیٹی سے مشورے اور منظوری کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے سابق چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد کا نام نگران وزیر اعظم کیلئے تجویز کیا ہے۔
دریں اثنا ذرائع نے بتایا تھا کہ نگران وزیر اعظم کیلئے سابق چیف جسٹس گلزار احمد اور سابق گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر عشرت حسین کے ناموں پر غور کیا جا رہا ہے۔
یا درہے کہ صدر مملکت نے وزیراعظم عمران اور شہباز شریف کے نام خط لکھا تھا جس میں کہا گیا کہ اسمبلی تحلیل ہونےکے تین دن کے اندر کسی ایک نام پراتفاق نہ ہو تو دونوں شخصیات دو دو نام کمیٹی کوبھیجیں گی۔ صدر مملکت کے خط میں کہا گیا کہ وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر نگران وزیراعظم کے لیے کسی ایک نام پر متفق نہیں ہوتے تو اسپیکر قومی اسمبلی 8 ارکان پر مشتمل ایک کمیٹی بنائیں گے جس میں حکومت اور اپوزیشن دونوں کے ارکان شامل ہوں گے جب کہ کمیٹی سابق قومی اسمبلی ارکان اور سینیٹ ارکان پر مشتمل ہوگی۔
ادھر صدر مملکت کے خط سے متعلق سوال پر شہباز شریف نے کہا ہے کہ صدر، عمران خان اور ڈپٹی اسپیکر نے آئین شکنی کی ہے، آئین شکن صدر کے خط کا جواب کس طرح دے سکتے ہیں۔شہباز شریف کے جواب پر ردعمل دیتے ہوئے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کو نگران وزیراعظم کی مشاورت کا حصہ نہیں بننا تو ان کی مرضی، ہم دو نام دے چکے، سات دن میں ہمارے ناموں میں سے ایک منتخب ہوجائےگا۔

Related Articles

Back to top button