ورلڈ کپ:پاکستان نیوزی لینڈ کو شکست دے کرفائنل میں پہنچ گیا

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے پہلے سیمی فائنل میچ میں پاکستان نیوزی لینڈ کو 7 وکٹوں سے شکست دے کر فائنل میں پہنچ گیا.

سڈنی میں کھیلے گئے میچ میں قومی ٹیم نے نیوز ی لینڈ کے 153 رنز کے ہدف کا تعاقب شروع کیا تو محمد رضوان نے اننگز کی پہلی ہی گیند پر چوکا لگایا لیکن وہ اس سے زیادہ فائدہ اٹھانے میں ناکام رہے اور پہلے اوور میں قومی ٹیم نے 7رنز بنائے۔بابر اعظم کو پہلی ہی گیند پر موقع ملا جب سلپ میں کھڑے ڈیون کونوے ان کا کیچ نہ لے سکے جبکہ بولٹ کے ایک اوور میں دونوں اوپنرز نے تین چوکے مارے۔

پاکستانی ٹیم کےدونوں کھلاڑیوں نے پاور پلے کا بھرپور فائدہ اٹھایا اور چھ اوورز میں ٹیم کو 55رنز کا عمدہ آغاز فراہم کیا،دونوں کھلاڑیوں نے شاندار کھیل کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے رنز بنانے کا سلسلہ جاری رکھا اور دس اوورز کے اختتام تک کوئی وکٹ نہ گرنے دی۔

پورے ٹورنامنٹ میں آؤٹ آف فارم رہنے والے پاکستان کے کپتان نے فارم میں واپسی کا ثبوت دیتے ہوئے 38 گیندوں پر7 چوکوں کی مدد سے 50 مکمل کی۔دونوں اوپنرز نے ٹیم کو 105 رنز کا آغاز فراہم کیا جس کے بعد بابر کی 53 رنز کی اننگز اختتام کو پہنچی۔

قومی ٹیم کے کھیلاڑی رضوان نے بھی بہترین کھیل کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے 36 گیندوں پر نصف سنچری اسکور کی،محمد رضوان نے 43 گیندوں پر 57 رنز کی اننگز کھیلی لیکن بولٹ کی فل ٹاس گیند پر بڑا شاٹ کھیلنے کی کوشش میں وہ کیچ دے بیٹھے،نوجوان حارث نے ایک مرتبہ پھر 26 گیندوں پر 30 رنز کی اننگز کھیلی لیکن فتح سے محض دو رنز قبل وہ مچل سینٹنر کو وکٹ دے بیٹھے۔

پاکستان نے آخری اوور میں ہدف حاصل کر کے میچ میں تین وکٹوں سے فتح حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ فائنل میں بھی جگہ بنا لی۔

محمد رضوان کو شاندار نصف سنچری بنانے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا،میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل تھیں۔

قبل ازیں کیویز نے مقررہ 20 اوورز میں4 وکٹوں کے نقصان پر 152 رنز بنائے، نیوزی لینڈ کی پہلی وکٹ 4 رنز جبکہ دوسری 38 رنز پر گری، تیسری وکٹ 49‌ رنز اور چوتھی وکٹ 117 رنز پر گری، شاہین شاہ نے اوپننگ بلے باز کو ایل بی ڈبلیو آئوٹ کیا، کیویز کی جانب سے فن ایلن اور ڈیوون کونوے وکٹ‌پر موجود ہیں، کیویز کپتان نے پاکستان کیخلاف ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا ہے۔

ٹاس کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیوی کپتان نے بتایا کہ یہ وکٹ ہمارے لیے نئی لیکن بیٹنگ کے لیے ساز گار ہے، اس لیے حریف کو بڑا ٹوٹل دینا چاہتے ہیں جبکہ اس موقع پر پاکستانی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے کہا کہ ہم اگر ٹاس جیتتے تو پہلے بیٹنگ کا ہی فیصلہ کرتے، انھوں نے بتایا کہ ٹیم میں‌کوئی تبدیلی نہیں‌کی گئی، فائنل میں‌پہنچنے کی بھرپور کوشش کریں گے۔

واضح رہے کہ ٹی20 ورلڈ کپ میں انڈیا کے ہاتھوں اپنا پہلا میچ ہارنے کے بعد پاکستانی ٹیم 27 اکتوبر کو زمبابوے کے خلاف برسبین میں بھی ہار گئی تھی جس کے بعد قومی ٹیم ٹی20 ورلڈ کپ سے تقریباً باہر ہوگئی تاہم اگر مگر کی صورت حال، جنوبی افریقہ کے خلاف کامیابی اور جنوبی افریقہ کی نیدرلینڈز کے خلاف اپ سیٹ شکست نے پاکستان کو سیمی فائنل تک پہنچا دیا۔

نیوزی لینڈ کے خلاف سیمی فائنل میں شاداب خان، محمد حارث، افتخار احمد، شاہین آفریدی اور حارث رؤف کو پاکستان ٹیم کے اہم کھلاڑیوں کے طور پر دیکھا جارہا ہے۔ بیٹر فخر زمان کی جگہ ٹیم میں جگہ بنانے والے محمد حارث نے آخری دونوں میچز میں ٹیم کی جیت میں کلیدی کردار ادا کیا۔

محمد حارث نے جنوبی افریقہ کے خلاف 11 گیندوں پر 28 جبکہ بنگلہ دیش کے خلاف 18 گیندوں پر 31 رنز کی میچ وننگ اننگز کھیلی تھی، دوسری جانب بنگلہ دیش کے خلاف 4 وکٹیں حاصل کرنے والے شاہین شاہ آفریدی کی فارم میں واپسی کو بھی ٹیم کے لیے خوش آئند قرار دیا جا رہا ہے لیکن پورے ملک کی نظریں کپتان بابر اعظم اور محمد رضوان پر مرکوز ہیں۔

ٹی20 ورلڈ کپ کپتان بابراعظم کے لیے ڈراؤنا خواب ثابت ہو رہا ہے اور ان کے سٹرائیک ریٹ پر تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے، اسی سلسلے میں منگل کے روز آرام کے بجائے بابر اعظم اکیلے نیٹ پریکٹس کرتے دکھائی دیئے۔

اسی طرح دونوں ٹیموں کے درمیان اب تک کُل 28 ٹی20 میچز کھیلے گئے ہیں جن میں 17 بار پاکستان جبکہ 11 مرتبہ نیوزی لینڈ نے فتح حاصل کی۔پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان اب تک دونوں فارمیٹس کے ورلڈ کپ کے تین سیمی فائنلز ہوچکے ہیں جس میں تینوں بار جیت پاکستان کی ہوئی ہے۔

1992 اور 1999 کے آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو شکست دی تھی، 2007 میں کھیلے گئے ٹی20 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں بھی نیوزی لینڈ کو پاکستان کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔گذشتہ ایک ماہ کے دوران دونوں ٹیمیں چوتھی مرتبہ ایک دوسرے کے خلاف کھیلیں گی۔

Related Articles

Back to top button