پرویز الٰہی نے عمران کو اسمبلیاں نہ توڑنے کا مشورہ دے دیا

وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویزالہیٰ نے تحریک انصاف کے چیئرمین  عمران خان کو اسمبلیاں نہ توڑنے کا مشورہ دیا ہے۔

زمان پارک لاہور میں عمران خان سے وزیراعلیٰ پنجاب پرویزالہیٰ نے ملاقات کی، جس میں پرویزالٰہی نے عمران خان کو اسمبلیاں فوری طور پر تحلیل نہ کرنے کا مشورہ دے دیا ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدریپرویز الہیٰ نے عمران خان کو تجویز دی کہ اپوزیشن کو تحریک عدم اعتماد لانے کا شوق پورا کرنے دیں، اپوزیشن کے پاس نمبر گیم پوری نہیں اور وہ بری طرح ناکام ہوں گے، پی ڈی ایم کو ایوان میں شکست فاش دیں گے۔

ملاقات میں پرویزالٰہی نے یہ بھی کہا کہ استعفے دینے کا فیصلہ عمران خان کا ہے اور ہم مکمل حمایت کرتے ہیں۔

دریں اثنا تحریک انصاف کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر پرویز خٹک نے وزیراعلیٰ ہاؤس لاہور میں وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الہیٰ سے ملاقات کی، ملاقات میں ملک کی موجودہ سیاسی صورت حال اور پنجاب اسمبلی سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔

چودھری پرویز الٰہی نے یقین دلایا کہ وہ اپوزیشن کے ہر ہتھکنڈے کا بھرپور جواب دیں گے، پی ڈی ایم نااہل لوگوں کا ٹولہ ہے، عمران خان نے 13 جماعتوں کی سیاست کو زیرو کر دیا ہے، مخالفین کی جانب سے عدم اعتماد یا گورنر راج کے شوشے صرف وہ اپنا دل خوش کرنے کیلئے چھوڑتے ہیں،انہوں نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ اپوزیشن میں عدم اعتماد کا حوصلہ ہے نہ ان کے پاس نمبرز پورے ہیں، ملاقات میں دوران گفتگو پرویز خٹک نے کہا کہ عمران خان عوام کے دلوں میں بستے ہیں۔

قبل ازیں تحریک انصاف کی اعلیٰ سطحی کمیٹی نے صوبائی اسمبلیوں کی تحلیل کے معاملے پر اپنی سفارشات تیار کرلیں ہیں۔

باخبر  ذرائع کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے وائس چیئرمین شاہ محمود کی زیرصدارت اجلاس ہوا جس میں میاں اسلم اقبال، محمود الرشید، حماد اظہر اور اعجاز چودھری سمیت دیگر ارکان شریک ہوئے، کمیٹی کے ارکان کی جانب سے 20 دسمبر تک اسمبلیاں تحلیل کرنے کی سفارش کی گئی ہے جبکہ پنجاب سے تعلق رکھنے والے کچھ ارکان نے فوری اسمبلیاں تحلیل نہ کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ارکان نے رائے دی کہ سیاسی کارڈز کھیلتے ہوئے ٹائمنگ کو مد نظر رکھا جائے، اسمبلیوں کی تحلیل تب کی جائے جب وفاق اوردیگرصوبوں کی اسمبلیاں تحلیل کرنے کے لیے دباؤ بڑھ سکے، اس وقت حلقوں میں ترقیاتی کاموں کے لیے اربوں روپے مالیت کے ٹیندرز ہوچکے ہیں اور متعدد حکومتی منصوبے تکمیل کے آخری مراحل میں ہیں، کمیٹی کی سفارشات پر پارلیمانی بورڈز کے اجلاسوں کے بعد تاریخ کا حتمی فیصلہ عمران خان کریں گے۔

دوسری جانب پی ٹی آئی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس کل دوپہر اڑھائی بجے 90 شاہراہِ قائد اعظم ایوان وزیراعلیٰ میں ہو گا جس میں ارکان اسمبلی سے اسمبلیوں کی تحلیل کے معاملے پر رائے لی جائے گی۔

Related Articles

Back to top button