پنجاب:را کے رکن سمیت کالعدم تنظیموں کے 9 ارکان گرفتار

سیکیورٹی فورسز کے پنجاب بھر میں خفیہ آپریشنز کے دوران بھارتی خفیہ تنظیم را کے ایجنٹ سمیت 9 ارکان کو حراست میں لے لیا گیا، محکمہ انسداد دہشت گردی کی جانب سے گزشتہ ہفتے 38 خفیہ آپریشنز کیے گئے، کارروائیوں کا مقصد کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنا تھا۔
ان کارروائیوں کے دوران بھارتی خفیہ ایجنسی را کے ایک مبینہ رکن نوید اختر کو لاہور سے گرفتار کیا گیا اور اسے ایک بڑی کامیابی قرار دیا، ملزم جوہر ٹاؤن اور انارکلی میں ہونے والے دو بڑے دہشت گرد حملوں میں ملوث بتایا جاتا تھا، سی ٹی ڈی اس سے پوچھ گچھ کر رہی ہے، اسی طرح ٹیموں نے دو دیگر مشتبہ افراد رسول خان اور ابراہیم خان کو بھی دھماکا خیز مواد رکھنے کے الزام میں گرفتار کیا۔
ان کا کہنا تھا کہ کارروائیوں کے دوران سی ٹی ڈی نے 40 مشتبہ افراد کو تفتیش کے لیے حراست میں لیا اور ان میں سے نو کو باضابطہ طور پر گرفتار کیا گیا کیونکہ ان کا تعلق مختلف کالعدم عسکریت پسند تنظیموں سے تھا، گرفتار افراد کی شناخت ریاض، سید تقی الحسنین، اسد عباس (کالعدم سپاہ محمد پاکستان)، صدام حسین، عبدی اللہ خان، ارشد (تحریک طالبان پاکستان)، القاعدہ کے جمیل الرحمان اور لشکر جھنگوی کے خالد محمود کے نام سے ہوئی ہے۔
سی ٹی ڈی ٹیموں نے ان کے قبضے سے 5 کلو بارودی مواد، 40 ڈیٹونیٹرز، 30 فٹ سیفٹی فیوز، پانچ دستی بم، چھ گولیوں کے ساتھ ایک پستول (9 ایم ایم)، 82 ہزار 240 روپے نقد رقم اور ایک جیپ برآمد کر لی، ترجمان نے کہا کہ سی ٹی ڈی پنجاب نے ملزمان کے خلاف صوبے کے مختلف تھانوں میں سات ایف آئی آر درج کرائی ہیں۔

Related Articles

Back to top button