عمران ،پرویزالٰہی کا محسن نقوی کا تقرر چیلنج کرنے پر اتفاق

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور مسلم لیگ ق کے رہنما پرویز الہیٰ نے نگراں وزیراعلیٰ پنجاب کی تقرری کو عدالت میں چیلنج کرنے پر اتفاق کرلیا۔

زمان پارک میں پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان اور پرویز الٰہی  کی ملاقات ہوئی،جس میں سیکرٹری جنرل اسد عمر، فواد چودھری، سینیٹر اعظم سواتی اور حماد اظہر نے بھی شرکت کی، ملاقات کے دوران الیکشن کمیشن کے اقدامات کے خلاف آئینی آپشنز پر بات چیت کی گئی۔

ملاقات کے دوران سیاسی رہنماؤں نے الیکشن کمیشن کے متنازعہ اقدامات کے خلاف احتجاج کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا، اعلیٰ عدلیہ سے رجوع کرنے اور سیاسی آپشنز پر بھی بات چیت کی گئی ،دونوں رہنماؤں نے ملاقات میں نگراں وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی کی تقرری کو چیلنج کرنے پر اتفاق کیا اور 25 جنوری کو عدالت میں درخواست دائر کرنے کا حتمی فیصلہ کیا۔ ملاقات میں وکلا اور پارٹی رہنماؤں سے قانونی مشاورت بھی مکمل کی گئی۔

باخبرذرائع کے مطابق قانون دان احمد اویس نے عمران خان اور ملاقات کے شرکا کو  مکمل آئینی و قانونی شقوں کے حوالے سے بریفنگ بھی دی۔

علاوہ ازیں ملاقات میں پرویز الہیٰ کے ساتھ آئندہ انتخابات اور دیگر معاملات بارے بھی گفتگو کی گئی جبکہ پی ٹی آئی نے چوہدری پرویز الہی کو اپنے احتجاجی لائحہ عمل سے بھی آگاہ کیا۔ اس بیٹھک میں پنجاب میں نگران وزیراعلی کی جانب سے کی جانے والی تقرریوں پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔

دریں اثنا عمران خان کی زیرصدارت پارٹی رہنماؤں کا اجلاس ہوا، جس میں فواد چوہدری، حسان خاور، اعظم سواتی، مسرت جمشید چیمہ، وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے شرکت کی۔  اجلاس میں موجودہ سیاسی صورتحال اور نگراں وزیراعلی پنجاب کے خلاف احتجاجی تحریک پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاس میں پی ٹی آئی کے مزید اراکین قومی اسمبلی کے استعفے منظور ہونے پر بھی مشاورت کی گئی جبکہ نگران وزیراعلیٰ پنجاب اور دونوں صوبوں میں انتخابات کی تاریخ پر عدالت سے رجوع کرنے پر بھی مشاورت کی گئی۔

سیف الملوک کھوکھر مسلم لیگ ن لاہور کے صدر مقرر

Related Articles

Back to top button