PTI کا انٹراپارٹی الیکشن کالعدم قرار، بلے کا نشان چھن گیا

الیکشن کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف کے انٹراپارٹی الیکشن کو کالعدم قرار دیتے ہوئے بلے کا نشان واپس لے لیا ہے، چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5 رکنی کمیشن  نے پی ٹی آئی انٹرا پارٹی الیکشن کا فیصلہ سنایا۔

الیکشن کمیشن کے فیصلے میں کہا گیا ہے کہ  پی ٹی آئی نے اپنے انتخابات پارٹی آئین کے مطابق نہیں کروائے جس کے بعد پی ٹی آئی بلے کے نشان کی اہل نہیں ہے۔الیکشن کمیشن کے فیصلے کے بعد بیرسٹر گوہرعلی چیئرمین پی ٹی آئی نہیں رہے۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی سے کہا تھا کہ وہ اپنے انٹرا پارٹی الیکشن دوبارہ کرائے۔پی ٹی آئی نے انٹرا پارٹی الیکشن کرائے جن میں گوہر خان کو بلامقابلہ چیئرمین منتخب کیا گیا۔تاہم اکبر ایس بابر نے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر کی کہ پی ٹی آئی کے الیکشن اس کے آئین کے مطابق نہیں ہوئے۔

یہ کیس الیکشن کمیشن میں چلا اور پھر پشاور ہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن کو فیصلے سے روکا لیکن پھر آج یعنی جمعے کے دن فیصلے کی ہدایت کی تھی۔الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی انٹرا پارٹی الیکشن کا فیصلہ سنایا جس میں پاکستان تحریک انصاف سے بلے کا انتخابی نشان چھین لیا گیا۔

Related Articles

Back to top button