شہباز، حمزہ کی عبوری ضمانتوں میں 14 مئی تک توسیع

خصوصی عدالت نے ن لیگ کے صدر شہباز شریف اور نومنتخب وزیراعلیٰ حمزہ شہباز کیخلاف می لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانتوں میں 14 مئی تک توسیع دے دی۔ بدھ کو سپیشل کورٹ سینٹرل کے اعجاز حسن اعوان نے وزیر اعظم شہباز شریف اور حمزہ شہباز سمیت دیگر کی منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانتوں اور کیس پر سماعت کی۔

دوران سماعت حمزہ شہباز عدالت میں پیش ہوئے لیکن وزیراعظم شہباز شریف عدالت میں حاضر نہ ہو سکے، شہباز شریف کے وکیل نے کہا کہ شہباز شریف کی طرف سے حاضری معافی کی درخواست دائر کی ہے، شہباز شریف کابینہ کی میٹنگ کی صدارت کے رہے ہیں اس لیے آج عدالت پیش نہیں ہو سکتے اور حاضری سے معافی کی درخواست جمع کرائی۔

وکیل امجد پرویز نے کہا کہ وزیراعظم کی مصروفیات کو سامنے رکھتے ہوئے سماعت عید کے بعد تک ملتوی کی جائے اور عدالت کو یقین دہانی کراتے ہیں کہ شہباز شریف خود عدالت پیش ہوں گے، عدالت نے وزیر اعظم کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کر لی۔

منی لانڈرنگ کیس میں شہباز، حمزہ فرد جرم کیلئے طلب

عدالت نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی عبوری ضمانتوں میں 14مئی تک توسیع کردی، عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ ہائی کورٹ سے اچھے کی امید ہے، ملک کا سب سے بڑا صوبہ تین ہفتوں سے چیف ایگزیکٹو سے محروم ہے، صدر مملکت اور گورنر کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں۔

Related Articles

Back to top button