بلوچستان بلدیاتی انتخابات کے غیر سرکاری اور غیر ختمی نتائج

صوبہ بلوچستان میں 9 سال بعد ہونیوالے بلدیاتی کے غیر سرکاری اور غیر حتمی تنائج آنے کا سلسلہ جاری ہے، اب کے نتایج کے مطابق آزاد امید وار آگے ہیں۔

16 میڈیا رپورٹس کے مطابق ہزار سے زائد امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوا، میونسپل کمیٹیوں کے 651 میں سے 220 وارڈزکے نتائج موصول ہوگئے ہیں جس کے مطابق آزاد امیدوار 116 نشستیں لے کر سب سے آگے ہیں، جے یو آئی 31 نشستوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے، بی اے پی 19، بی این پی 9 ، پیپلز پارٹی کی 8 سیٹیں ہیں۔

غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق میونسپل کمیٹی وارڈ نمبر1 کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے اورنگزیب 243 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے، عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار نقیب افغان 170 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے،یوسی 13، وارڈنمبر 5 ابتاری کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق جمہوری وطن پارٹی کے محمدامین 41 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے، یوسی 38، وارڈ نمبر 3 کے غیر حتمی،غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار محمد 6 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے، پی کے میپ کی بی بی زرہ نے 3 ووٹ لیے، وارڈ نمبر 3 میں 13 رجسٹرڈ ووٹ میں سے 9 کاسٹ ہوئے، یونین کونسل 38 پشین وارڈ نمبر 4 کا دلچسپ نتیجہ رہا، غیر حتمی غیر سرکاری نیتجے کے مطابق دونوں امیدواروں نے 5،5 ووٹ لیے، آزاد امیدوار زین اللہ، پی کے میپ کی حضرت بی بی کے ووٹ برابر رہے، وارڈ میں کل 10 ووٹ کاسٹ ہوئے، وارڈ نمبر 3 قاضی آباد سے بلوچستان نیشنل پارٹی کے امیدوار 500 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے، جمیعت علماء اسلام کے امیدوار شعیب بادینی 130ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتایج کے مطابق وارڈ نمبر 3 قاضی آباد سے بلوچستان نیشنل پارٹی کے امیدوار 500 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے، جمیعت علماء اسلام کے امیدوار شعیب بادینی 130ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، میونسپل کمیٹی دکی وارڈ 2 کے غیر حتمی ، سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار حیات اللہ 287 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے، آزاد امیدوار نقیب اللہ ناصر 85 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، وارڈ نمبر 4 کے غیر حتمی، سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار خانزادہ زرکون 154 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے، جمعیت علماء اسلام کے عطاء اللہ 50 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، یو سی 43 کے وارڈ 1 جوہڈانسر کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق بی این پی کے شبیر احمد 533 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے، آزاد امیدوار 199 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتایج کے مطابق یو سی 43 کے وارڈ 4 کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق بی این پی کے بشیر احمد 177ووٹ لیکر کامیاب ہوئے، آزاد امیدوار سیف اللہ 96 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، میونسپل کمیٹی بابو وارڈ کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار مفتی کفایت اللہ 385 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے، آزاد امیدوار خان محمد 281 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، میونسپل کمیٹی حیدر شاہ وارڈ کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلزپارٹی کے امیدوار بابو محمد عثمان 554 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ آزاد امیدوار خادم حسین مستوئی 308 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، یونین کونسل 7 وارڈ 1 کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق جمیعت علما اسلام کے مولانا عبدالرؤف 364 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے، آزاد امیدوار محمد ادریس بنگلزئی نے 260 ووٹ لئے اور وہ دوسرے نمبر پر رہے۔

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتایج کے مطابق میونسپل کمیٹی وارڈ نمبر 3 عزیز آباد کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق کے بی اے پی کے امیدوار منیر احمد 196ووٹ لیکر کامیاب رہے، آزاد امیدوار عبدالقادر بنگلزئی نے 172 ووٹ لئے، یونین کونسل 19 وارڈ نمبر 5 کے غیر حتمی، غیر سرکاری نتیجے کے مطابق نصرالدین ناصر 258 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے، میونسپل کمیٹی وارڈ نمبر1 سے آزاد امیدوار محمد یوسف ترین 369 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے، وارڈ نمبر 6 سے آزاد امیدوار عبدالنبی 155ووٹ لیکر کامیاب ہوئے جبکہ وارڈ نمبر 3 بستی کمال شاہ سے آزاد امیدوار علی شیر سومرو نے 356 ووٹ لیکر کامیابی سمیٹی، یو سی 12 وارڈ 4 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق جے یو آئی کے حیات خان جمالدینی 297 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔

بلوچستان کے بلدیاتی انتخابات میں پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی جو بغیر کسی وقفے کے شام 5 بجے تک جاری رہی، باقی 2 اضلاع کوئٹہ اور لسبیلہ میں انتخابات کے شیڈول کا اعلان بعد میں کیا جائے گا کیونکہ صوبائی حکومت کی جانب سے حلقہ بندیوں میں اضافے کے بعد وہاں انتخابات کی حلقہ بندی جاری ہے۔

بشریٰ بی بی کی سہیلی فرح خان نے کہاں سے کتنا مال بنایا؟

بلدیاتی انتخابات کی پولنگ کیلئے32 اضلاع میں 5 ہزار 226 پولنگ سٹیشنز قائم کیے گئے تھے جن میں سے 2 ہزار 54 پولنگ سٹیشنز انتہائی حساس، ایک ہزار 974 حساس قرار دیئے گئے۔ الیکشن میں 16 ہزار 195 امیدوار مدمقابل ہیں جن میں سے 102 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہو گئے ہیں، پولنگ سٹیشنز پر پولیس، لیویز اور ایف سی کے جوان تعینات کیے گئے تھے۔

دوسری جانب الیکشن کے دوران صوبے کے مختلف علاقوں میں لڑائی جھگڑے ہوئے، فائرنگ اور بم حملوں کے واقعات رپورٹ ہوئے، قلات کے علاقے منگچر جوہان کراس بازار کے قریب روڈ کنارے نصب بم دھماکے سے ایک شخص زخمی ہوا، قلات میں ہی میونسپل کمیٹی انٹر کالج پولنگ سٹیشن پر دستی بم حملہ کیا گیا جس سے ڈیوٹی پر مامور دو لیوز اہلکار زخمی ہوئے۔

لیویز کے مطابق نامعلوم افراد دستی بم پھینک کر فرار ہو گئے، نوشکی میں یوسی 1 وارڈ نمبر 7 پدگ میں دو گروپوں میں معمولی تکرار پر فائرنگ سے ایک شخص زخمی ہوا، زخمی شخص ہسپتال منتقلی کے وقت زخموں کی تاب نہ لا تے ہوئے چل بسا، بلوچستان کے علاقے ڈیرہ بگٹی میں پولنگ سٹیشن پر نامعلوم سمت سے 3 راکٹ فائر ہوئے جو پولنگ سٹیشن میں موجود لیویز چوکی کے قریب گرے، تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

ادھرڈیرہ بگٹی میں ضلع کوہلو یونین کونسل 6 وارڈ نمبر 2 مصری خان ماکوڑی میں لڑائی کے دوران 8 افراد زخمی ہوئے، جبکہ کوہلو میں مونسپل کمیٹی وارڈ نمبر 1 کے فیمیل پولنگ اسٹیش میں ہاتھا پائی سے 4 افراد زخمی ہوئے، لورالائی کے علاقے کلی زنگیوال پولنگ سٹیشن میں سیاسی جماعتوں کے کارکنوں کے درمیان جھگڑے سے ایک شخص زخمی ہوا۔

Related Articles

Back to top button