سیاست میں آنے پر اداکارہ ارمیلا کا مذاق کیوں اڑایا گیا؟


معروف شخصیات کا تعلق چاہے کسی بھی شعبے سے ہو، سیاست میں قسمت آزمائی کرنا کوئی نئی بات نہیں، ایسا ہی فیصلہ بھارتی اداکارہ ارمیلا مٹونڈکر نے بھی کیا تھا، جس پر اداکارہ کو لوگوں کی جانب سے عجیب و غریب تبصروں کا سامنا کرنا پڑا۔

بالی وڈ اداکارہ ارمیلا مٹونڈکر نے ایک انٹرویو میں بتایا ہے کہ جب سیاست کے میدان میں اترنے کا فیصلہ کیا تو انہیں بہت سے لوگوں نے ’عجیب نظر‘ سے دیکھا، ارمیلا نے بتایا کہ سیاست میں آتے ہی ان کے بارے میں عجیب عجیب تبصرے شروع ہوگئے جن کو سن کر حیرت ہوتی تھی۔

اداکارہ کے مطابق ایسا تب بھی ہوتا ہے جب آپ خاتون ہوں، خوبصورت اور گلیمرس بھی ہوں، اگر آپ ایک مرد اداکار ہیں تو ہو سکتا ہے آپ کے ساتھ ایسا نہ ہو۔ ارمیلا کا کہنا تھا کہ یہی سمجھ لیا جاتا ہے کہ اگر ایک خاتون اور وہ بھی اداکارہ سیاست میں آئے گی تو وہ گونگی ہو گی اور سوچنے سمجھنے کی صلاحیت سے عاری ہو گی۔ ان کا کہنا تھا کہ لوگوں کو اب بھی صرف یہ معلوم کرنا ہے کہ میں اب کیا کر رہی ہوں؟ میرا یقین کریں اب بھی کچھ لوگ ایسا ہی سوچتے ہیں۔

اداکارہ نے سیاست میں حصہ لینے والی دیگر خواتین کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کو بھی میرے جیسی صورت حال کا سامنا رہا تاہم مجھے شوبز کی وجہ سے زیادہ نشانہ بنایا گیا، اداکارہ نے اپنے شوہر محسن کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے میرے سیاسی کیریئر کے دوران ہر قدم پر مجھے سپورٹ کیا جو کہ ان کے لیے حیران کن تھا۔

ارمیلا جلد ہی زی ٹی وی کے ریئلٹی شو ’ڈانس انڈیا ڈانس سپر مومز‘ میں بطور جج نظر آئیں گی، 2019 میں انڈین نیشنل کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے والی اداکارہ نے رواں سال ہی لوک سبھا کے انتخابات میں حصہ لیا تھا، الیکشن ہارنے کے بعد اسی سال اداکارہ نے کانگریس سے استعفیٰ دے دیا تھا اور دسمبر 2020 میں شیو سینا کا حصہ بن گئی تھیں۔ واضح رہے کہ ارمیلا نے بطور چائلڈ سٹار فلم انڈسٹری میں قدم رکھا تھا، 1983 میں فلم معصوم سے انڈسٹری میں خود کو روشناس کرایا، جبکہ ستیا اور خوبصورت فلموں نے ان کی کامیابی کو مزید بلندیوں تک پہنچایا۔

Related Articles

Back to top button