حرا مانی ساڑھی کے ساتھ ٹی شرٹ پہننے پر تنقید کا شکار

پاکستانی ٹی وی ڈراموں کی معروف اداکارہ حرا مانی کو ساڑھی کے ساتھ ٹی شرٹ پہن کر ایک پروگرام میں شرکت کرنے کے باعث سوشل میڈیا پر شدید تنقید کا سامنا ہے۔ شوبز اور فیشن انڈسٹری میں آئے دن نئے ٹرینڈز اوراسٹائل متعارف ہوتے رہتے ہیں، تاہم حال ہی میں اداکارہ حرامانی کو ساڑھی کے ساتھ ٹی شرٹ پہن کر ایک ٹی وی پروگرام میں شرکت کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ حرا مانی ندا یاسر کے مارننگ شو میں اپنے آنے والے ڈرامے ’یہ نہ تھی ہماری قسمت‘ کی تشہیر کے لیے ساتھی اداکار منیب بٹ اور عائزہ اعوان کے ہمراہ شرکت کی۔ ان کا ڈراما ’یہ نہ تھی ہماری قسمت‘ اے آر وائے پر نشر کیا جا رہا ہے، جس میں وہ منیب بٹ کی اہلیہ کا کردار ادا کرتی دکھائی دیتی ہیں۔

ڈرامہ ’یہ نہ تھی ہماری قسمت‘ کی کہانی سیما مناف نے لکھی ہے جب کہ اس کی ہدایات سید علی رضی اسامہ نے دی ہیں۔ ڈرامے کی تشہیر کے سلسلے میں حرا مانی منفرد اسٹائل کے ساتھ ایک ٹی وی کے مارننگ شو میں شریک ہوئیں مگر لوگوں کا ان کا انداز پسند نہیں آیا اور انہیں خوب تنقید کا نشانہ بنایا۔ حرا مانی پروگرام میں ساڑھی کے ساتھ سیاہ رنگ کی ٹی شرٹ پہن کر شریک ہوئی تھیں اور انہوں نے اپنے لباس کی تصاویر انسٹاگرام پر بھی شیئر کیں۔

عارف لوہار اور میشا کی جگنی پر فراڈیے کا ملکیتی دعویٰ

حرا مانی نے تصاویر شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ یہ منفرد ساڑھی ’پرنیان بائے عائشہ جواد‘ کی جانب سے فروخت کے لیے پیش کی گئی ہے۔ حرا مانی کی ٹی شرٹ اور ساڑھی کے ساتھ تصاویر کو ٹی وی چینل کے انسٹاگرام سمیت فیشن ہاؤس کے انسٹاگرام پر بھی شیئر کیا، جہاں لوگوں نے کمنٹس کرتے ہوئے اداکارہ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ لوگوں نے کمنٹس کیے کہ حرا مانی کو لباس پہننے کی سمجھ نہیں ہے، وہ کبھی بھی کسی طرح کا بھی لباس پہن لیتی ہیں۔ بعض افراد نے لکھا کہ ساڑھی کے ساتھ ٹی شرٹ کون پہنتا ہے؟

کچھ لوگوں نے تو حرا مانی کو پاگل بھی قرار دے دیا۔ تاہم جہاں لوگوں نے اداکارہ کو ان کے فیشن اور لباس پر تنقید کا نشانہ بنایا، وہیں بعض لوگوں نے ان کے انداز و اسٹائل کی تعریف کرتے ہوئے انہیں خوبصورت بھی قرار دیا۔ ساڑھی اور ٹی شرٹ پہننے سے قبل بھی حرا مانی کو ان کے انداز، لباس اور پرفارمنس کی وجہ سے بھی تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔ ان کے علاوہ دیگر شوبز شخصیات اور خصوصی طور پر اداکاراؤں کو ان کے لباس اور فیشن پر تنقید کا سامنا رہا ہے۔ تاہم اچھی بات یہ ہے کہ وہ لوگوں کی تنقید کو خاطر میں نہیں لاتیں اور اپنی من مرضی کرتی رہتی ہیں۔

Related Articles

Back to top button