طالبان نے لڑکی ہونا ہی غیرقانونی بنادیا،ملالہ یوسفزئی

نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسفزئی کاکہنا ہے کہ طالبان نے لڑکی ہونا ہی غیرقانونی بنادیا۔نسلی عصبیت کو انسانیت کیخلاف جرم قرار دیاجائے۔

نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسفزئی کا نیلسن منڈیلاکی برسی پر جوہانسبرگ میں خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ 2سال پہلے تک افغانستان میں عورتیں کام کرتی تھیں۔افغان خواتین وزیر تھیں۔کرکٹ اور فٹبال کھیلتی تھیں۔سب کچھ بہترین نہ ہونے کے باوجود پیشرفت تھی۔افغان لڑکیوں کو اعلیٰ تعلیم سے

غزہ میں اسرائیلی مظالم،اقوام متحدہ نے تاریک لمحہ قرار دیدیا

روک دیاگیا۔طالبان کو نسلی عصبیت کا مرتکب قرار دیا جائے۔

Related Articles

Back to top button