اداکارہ آمنہ الیاس کا فلموں میں آئٹم سانگ کا دفاع

صرف 17 برس کی عمر میں ماڈلنگ سے کیرئیر کا آغاز کرنیوالی اداکارہ آمنہ الیاس نے فلموں میں آئٹم گانوں کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ عام طور پر آئٹم سانگ کا مطلب غلط لیا جاتا ہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ پاکستانی شائقین انہی آئٹم سانگز کو دیکھ کر بھارتی اداکارائوں کی تعریف کرتے نہیں تھکتے جبکہ دوسری جانب پاکستانی اداکارائوں کو تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔

کچھ عرصہ قبل ریلیز ہونے والی بائیوگرافی فلم ’’چوہدری‘‘ کے ’آتش‘ نامی گانے میں ڈانس پرفارمنس سے مداحوں کو محظوظ کرنے والی ماڈل اور اداکارہ آمنہ الیاس نے ایک انٹرویو میں کہا کہ ماضی میں بھی پاکستانی گانوں میں بابرہ شریف اور ریشم جیسی اداکارائیں آئٹم سانگس پر پرفارمنس کرتی تھیں اور شائقین ان پر تنقید کیے بغیر ان کے رقص سے محظوظ ہوا کرتے تھے۔ اداکارہ کے مطابق اب ’آئٹم سانگ‘ کا مطلب غلط لیا جاتا ہے، اس کا نام سنتے ہی لوگوں کے ذہن میں عریان اور بولڈ لباس میں ڈانس کرتی خواتین آ جاتی ہیں مگر ایسا نہیں، آمنہ الیاس کا کہنا تھا کہ آئٹم نمبر پر جنس کے فرق کے بغیر کوئی بھی آرٹسٹ فن کا مظاہرہ کر سکتا ہے اور ایسے گانوں میں شامل رقص کو عریانیت سے جوڑنا غلط ہے۔

سلمان خان کے دوسرے بھائی سہیل خان کی بھی طلاق ہو گئی

آمنہ الیاس نے شکوہ کیا کہ پاکستانی صارفین آئٹم سانگس پر بھارتی اداکاراؤں کی تو تعریفیں کرتے ہیں مگر پاکستانی اداکاراؤں کے خلاف نفرت والے بیانات دیتے ہیں۔آمنہ الیاس کے مطابق ان کی نظر میں ’شیلا کی جوانی‘ پر کترینہ کیف کی پرفارمنس بھی ایسی ہی تھی، جیسی ’بلی‘ پر مہوش حیات یا ’ٹوٹی فروٹی‘ پر عائشہ عمر کی پرفارمنس تھی اور وہ تمام اداکاراؤں کی پرفارمنس کی تعریفیں کرتی ہیں، آمنہ الیاس نے ’آتش‘ گانے کی ریہرسل کے حوالے سے بات بھی کی اور بتایا کہ میں نے کھل کر ساتھی مرد کوریوگرافرز کے ساتھ ان کی پریکٹس کی اور شوٹنگ کے دوران بعض مناظر مشکل بھی تھے، گانے کے دوران وہ تین مختلف بولڈ اور تنگ لباس تبدیل کرتی دکھائی دیتی ہیں جو کہ تین لباس پر فلمایا گیا پہلا پاکستانی آئٹم سانگ بھی ہے۔

خیال رہے کہ ان کے گانے ’آتش‘ کو فلم ’چوہدری‘ کی طرح کوئی خاص پذیرائی نہیں ملی تھی مگر یوٹیوب پر اسے 10 لاکھ سے زائد بار دیکھا جا چکا ہے اور کئی لوگوں نے ان کی بولڈ پرفارمنس پر انہیں تنقید کا نشانہ بھی بنایا تھا۔ اگرچہ آمنہ الیاس پہلے بھی فلموں میں کام کر چکی ہیں مگر پہلی بار آئٹم سانگ پر پرفارمنس کی تھی اور ’’چوہدری‘‘ میں ان کا کوئی کردار نہیں تھا، ’’چوہدری‘‘ فلم سندھ پولیس کے سابق شہید افسر چوہدری اسلم کی زندگی پر بنائی گئی تھی جنہیں ایک خود کش بم دھماکے میں مار دیا گیا تھا۔

Related Articles

Back to top button