زرداری نے ایک منجھے ہوئے کپتان کو کیسے کلین بولڈ کیا؟

اچھے کھلاڑی کی ایک بڑی خوبی یہ ہوتی ہے کہ وہ شدید تر دباؤ کے باوجود اپنی نظریں گیند پر جمائے رکھتا ہے، آصف علی زرداری نے بھی بطور صدر ہر طرح کے دباؤ اور سازشوں کے باوجود اپنی مکمل توجہ حکومت کی پانچ سالہ مدت مکمل کرنے پر مرکوز رکھی اور وہ ایسا کرنے میں کامیاب بھی رہے، اس دوران انکے ایک وزیر اعظم کو عدلیہ کے ہاتھوں رخصت بھی کر دیا گیا لیکن وہ پھر بھی فوکسڈ رہے اور اپنی حکومت گرانے کی ہر سازش ناکام بنا دی۔

دوسری جانب 1992 کا کرکٹ ورلڈ کپ جیتنے والے سابق کپتان عمران خان کے بارے میں عمومی تاثر یہی ہے کہ انہوں نے امپائر کی مدد سے اقتدار حاصل کرنے کے بعد اپنے وعدوں کے مطابق عوامی فلاح کا ایجنڈا اپنانے کی بجائے ساری توجہ اپوزیشن قیادت کے احتساب پر مرکوز رکھی، چنانچہ اسی اپوزیشن نے آصف علی زرداری کی زیر قیادت اکٹھے ہو کر 9 اپریل 2022 کو عمران کو کان سے پکڑ کر اقتدار سے باہر کر دیا۔ یوں کپتان کی حکومت اپنی مدت پوری کرنے سے پہلے ہی رخصت ہو گئی اور عمران وہ پہلے پاکستانی وزیراعظم بن گئے جنہیں تحریک عدم اعتماد کے ذریعے رخصت کیا گیا۔

سیاسی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ آصف زرداری عمران خان کو کلین بولڈ کرنے میں اس لیے کامیاب رہے کہ ایک کرکٹر ہونے کے باوجود کپتان نے بال سے اپنی نظریں ہٹا لی تھیں اور ساری توجہ امپائر پر مرکوز کر لی تھی۔ ایسے میں سوال اٹھتا ہے کہ عمران ایسا کیا کر سکتے تھے کہ وہ اپنی مدت پوری کرنے والے پہلے وزیرِ اعظم بن جاتے؟ اس سوال کا جواب دیتے ہوئے بی بی سی سے وابستہ سینئر صحافی ہارون رشید کہتے ہیں کہ یہ سمجھنے کے لیے ہمیں ماضی کا سفر کرنا پڑے گا۔ محترمہ بےنظیر بھٹو کی شہادت کے بعد پیپلز پارٹی کی کمان سنبھالنے والے آصف زرداری کی سیاسی بصیرت کا ہر کوئی قائل ہے۔ وہ چاہے گھی سیدھی انگلی سے نکالیں یا ٹیڑھی انگلی سے۔ ان کی سیاسی چال اکثر کامیاب رہتی ہے۔

آصف زرداری نے 2008 کے عام انتخابات میں پیپلز پارٹی کی جیت کے بعد اکثر سیاسی پنڈتوں کو غلط ثابت کرتے ہوئے وزارت عظمیٰ کی بجائے صدارت کا عہدہ منتخب کیا۔ آصف زرداری نے سر نیچے کر کے جیسے تیسے اپنی حکومت اور صدارت کی مدت مکمل کی۔ ان کے پاس القاعدہ سربراہ اسامہ بن لادن کی ایبٹ آباد میں امریکی چھاپے میں ہلاکت کے بعد کمزور عسکری اسٹیبلشمنٹ کے خلاف ایکشن لینے کا موقع موجود تھا لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا۔ انہیں میمو گیٹ اور سوئس اکاونٹس کے تنازعات میں پھنسایا گیا لیکن ان کی نظریں صرف اور صرف پانچ سالہ مدت مکمل کرنے پر رہیں اور اسے ان کی سب سے بڑی سیاسی کامیابی مانا جا سکتا ہے۔

یوں زرداری حکومت ملک کی پہلی سیاسی حکومت تھی جس نے 2008 سے لے کر 2013 تک اپنے پانچ سال مکمل کیے تھے۔ انکے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی اپنی مدت مکمل نہیں کر سکے اور عدلیہ کے ہاتھوں فارغ ہوگئے لیکن زرداری نے نے اپنی حکومت پھر بھی بچائے رکھی۔ پاکستان کو ایسے مستقل مزاج اور اپنی دھن کے پکے سیاست دان کم ہی ملے ہیں۔ آصف زرداری تو اپنے حکومتی ہدف حاصل کرنے میں سرخرو رہے لیکن ان کے بعد آنے والے نواز شریف متحدہ عرب امارات کا اقامہ رکھنے کے جرم میں سزا پانے کے بعد اپنی مدت پوری کرنے سے پہلے ہی نکال دیئے گئے۔ لیکن نواز شریف کے بعد فوج کے کندھوں پر بیٹھ کر اقتدار میں آنے والے عمران کا حشر سب سے برا ہوا اور وہ پارلیمنٹ کے ہاتھوں نکالے جانے والے پہلے وزیراعظم ٹھہرے۔

اللہ کے سامنے جھکنے والوں کو غلام بنایا جا رہا ہے

بقول ہارون رشید، پاکستان کی بحرانوں سے اٹی سیاسی تاریخ میں میں اگر کوئی چیز سب سے کمزور اور جسے کسی بھی وقت گرایا جا سکتا ہے تو وہ ہے وزیر اعظم۔ چاہے وہ بھاری مینڈیٹ والی نواز شریف کی یا سادہ اکثریت والی عمران خان کی حکومت ہو۔ جس ملک کے پہلے وزیراعظم لیاقت علی خان کو قتل کر کے راست سے ہٹایا گیا ہو وہاں بعد میں بھی ان کے جانشینوں ساتھ کچھ اچھا نہیں ہوا۔ 1947 میں ملک کے قیام کے بعد سے چار مرتبہ جمہوری حکومتوں کو فوجی آمروں نے چلتا بنایا۔ دو وزرائے اعظم کو عدلیہ نے برطرف کیا جبکہ ایک مقبول رہنما کو عدالت کے ذریعے پھانسی دلوائی گئی۔

اس تاریک سیاسی تاریخ پر نظر دوڑانے سے ایک بات واضح ہے کہ عوام کی ووٹ کی طاقت کے آئے منتخب نمائندوں کو ہٹانا سب سے آسان کام ہے۔ اس میں کبھی عدلیہ اور کبھی فوج پیش پیش رہی لیکن کئی گورنر جنرلوں اور صدرو نے بھی وزیراعظم کی پیٹھ میں چھرا گھونپ دیا۔ عمران خان کے معاملے میں بظاہر نہ تو فوج اور نہ ہی عدلیہ بلکہ منتخب نمائندوں نے آصف علی زردارینکی زیر قیادت پارلیمینٹ کے ذریعے عمران کو نکالنے میں کامیابی حاصل کی۔ سیاسی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ آصف علی زرداری عمران خان کو کلین بولڈ کرنے میں اس لیے کامیاب رہے کہ ایک کرکٹر ہونے کے باوجود موصوف نے بال سے اپنی نظریں ہٹا لی تھیں اور امپائر پر توجہ مرکوز کر لی تھی۔

How did Zardari clean bowl a seasoned captain? video

Related Articles

Back to top button