حریم شاہ نے ’’ایم فل ڈگری‘‘ کو بائیں ہاتھ کا کھیل کیوں قرار دیا؟

معروف ٹک ٹاکر حریم شاہ نے خود کو حافظ قرآن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ انھوں ںے متعدد اسلامی کورسز بھی کر رکھے ہیں اور ان کے لیے ایم فل کی ڈگری حاصل کرنا بائیں ہاتھ کا کھیل ہے، حافظہ ہونے کی وجہ سے تعلیمی میدان میں میرا ذہن بہت تیز ہے۔حریم شاہ نے کہا کہ میں نے اسلام کے ساتھ ساتھ دیگر مذاہب کی تعلیم بھی حاصل کی ہے، یہی وجہ ہے کہ میرے لیے مذہب جیسے موضوع میں ایم فِل کی ڈگری حاصل کرنا آسان ہے بلکہ میں تو کہتی ہوں کہ یہ میرے لیے بائیں ہاتھ کا کھیل ہے۔ ٹک ٹاکر نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ میں نے قرآن پاک حفظ کرنے کے ساتھ ساتھ ڈبل ماسٹرز بھی کیا ہوا ہے۔صحافی نے حریم شاہ سے سوشل میڈیا پر اُن کی وائرل ویڈیوز سے متعلق سوال پوچھا جس پر اُنہوں نے کہا کہ لوگ سوشل میڈیا پر میرے نام کا استعمال کرکے مشہور ہونا چاہتے ہیں، جتنا ٹرینڈ میرے نام کا بنایا جاتا ہے، اگر اتنی بات فلسطین کے لیے کی جائے تو سب کو ثواب ملے گا۔حریم شاہ نے کہا کہ فلسطین تباہ ہوگیا ہے، پاکستان کے حالات بھی خراب ہوتے جا رہے ہیں اور ہم مسلمان ہوکر ویڈیوز کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں، اگر میرے اختیار میں ہوتا تو میں پاکستان میں اسلامی سزائیں نافذ کرتی اور کسی پاک عورت پر تہمت لگانے والوں کو کوڑے پڑواتی کیونکہ کسی پاک عورت پر تہمت لگانا بہت سخت گناہ ہے، اگر کسی کے پاس میری ذاتی ویڈیوز ہوتیں تو اب تک منظرِ عام پر آجانی چاہئے تھیں، لوگ صرف گھٹیا شہرت کے لیے میرا نام استعمال کرکے مجھے بدنام کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ دنوں سماجی رابطے کی ویب سائٹ ایکس (سابق ٹوئٹر) پر حریم شاہ ٹاپ ٹرینڈ رہی تھیں، کہا جارہا تھا کہ حریم شاہ کی ذاتی ویڈیوز لیک ہونے جارہی ہیں۔

Related Articles

Back to top button