پاک بھارت فنکاروں میں کون ،کتنا تعلیم یافتہ ہے؟

اکثر مثال دی جاتی ہے کہ پڑھو گے لکھو گے تو بنو گے نواب لیکن پاکستان اور بھارتی فلم انڈسٹری میں یہ مثال ہمیشہ الٹ ہی ثابت ہوئی ہے، دونوں ممالک سے فنکار برادری نے معمولی تعلیمی قابلیت کے باوجود دنیا بھر میں اپنی پہچان بنائی ہے، ہندوستانی اور پاکستانی شوبز انڈسٹری پر راج کرنے والے ان اداکاروں کی تعلیمی قابلیت پر نظر دوڑائیں تو آپ کے ہوش اڑ جائیں گے کیونکہ فنکاروں نے کیرئیر کیلئے پڑھائی کو خیرباد کہہ دیا تھا۔بھارتی اداکارہ عالیہ بھٹ کے والد ڈائریکٹر اور پروڈیوسر ہیں اس کے باوجود اداکارہ نے فلم انڈسٹری میں جگہ بنانے کے لئے بھرپور محنت کی۔ اداکارہ کی تعلیمی قابلیت بھی صرف میٹرک ہے۔اداکارہ کرشمہ کپور کے نقش قدم پر چلتے ہی کرینہ کپور نے بھی پڑھائی کے مقابلے میں کیرئیر کو اہمیت دی۔ کرینہ نے اگرچہ کالج میں داخلہ تو لیا لیکن انھوں نے بارہویں کا امتحان بھی نہیں دیا۔کئی دہائیوں تک بالی وڈ پر راج کرنے والی اداکارہ کرشمہ کپور صرف 5ویں جماعت پاس ہیں، انھوں نے اداکاری کی دنیا میں آنے کے لئے اپنی پڑھائی چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا تھا۔لاکھوں دلوں کی دھڑکن سمجھے جانے والے رنبیر کپور کا کہنا ہے کہ جب انھوں نے تھرڈ ڈویژن میں میٹرک پاس کیا اور اپنے والدین کو بتایا تو خوشی سے ان کی آنکھوں میں آنسو آگئے کیوںکہ وہ اپنے خاندان کے پہلے میٹرک پاس لڑکے تھے۔لیکن پاکستانی فنکاروں کا تعلیمی معیار بھارتی فنکاروں کے مقابلے میں تسلی بخش ہے، پاکستانی اداکار شہریار منور اپنی وجاہت اور بیانات کی وجہ سے تو شہرت رکھتے ہیں لیکن بہت کم لوگوں کو پتہ ہوگا کہ تعلیمی اعتبار سے بھی وہ کافی باصلاحیت ہیں، شہریار نے آئی بی اے سے گریجویشن کر رکھی ہے۔پاکستان کے ممتاز اداکار عمران عباس جو نوجوانوں کے پسندیدہ اداکار ہیں اور انہوں نے اپنی جاندار اداکاری کی وجہ سے چند سالوں میں اپنے آپ کو منوایا ہے۔ انہوں نے لاہور کالج آف آرٹس سےآرکیٹیکچر کے شعبے میں ڈگری لے رکھی ہے۔

Related Articles

Back to top button